ثروت زہرا

...

ثروت زہرا

ثروت زہرا جدید لہجے اور احساس کی شاعرہ ہیں۔ ثروت زہرا کی شاعری کے دو مجموئے ،جلتی ہوا کا گیت اور وقت کی قید سے ،قارئین اور ناقدین سے داد و تحسین حاصل کر چکے ہیں۔اور ہندی وسندھی(کونج کرلائے تھی) میں تراجم بھی شایع ہو چکے ہیں وہ نظم اور غزل میں یکساں اظہارکی قدرت رکھتی ہیں لیکن ادبی حلقوں میں انہیں نظم گوشاعرہ کےطور پر زیادہ پہچانا جاتا ہے۔ ثروت زہرا کی شاعری عصرِحاضر میں فرد کے انفرادی احساس و مسائل سے لیکرقومی و بین الاقوامی شعورکا بھرپور ادراک رکھتی ہے۔عورت کی طرف سماجی رویہ ان کے شاعرانا طرزِاحساس اور لہجے کو افسردہ ضرور کرتا ہے لیکن اپنی شاعری میں وہ اپنی صنف پر کبھی احساسِ کمتری کا شکاردکھائی نہیں دیتی۔ وہ پاکستان کے علاوہ امریکہ بھارت،بحرین،قطراور متحدہ عرب امارات کے مشاعروں میں شریک رہتی ہیں۔ان کی نظم۔۔ بنتِ حوا ہوں میں ۔۔ کوتمام عورتوں کے احساساتی اظہار کا نمائندہ سمجھا جاتا ہے۔انکی نظموں اور غزلوں میں علامات،استعارے اور الفاظ کا اسلوب تازگی اور حیرت کی نئی دنیا سے آشنا کرتا ہے۔