ادبی تنظیم کن کے زیرِ اہتمام پہلا تعارفی و تنقیدی اجلاس و نعتیہ محفلِ مشاعرہ


12-Dec-2017

post1



ادبی تنظیم "کُن" کا پہلا تنقیدی و تعارفی اجلاس مورخہ یکم دسمبر 2017 بروز جمعۃالمبارک رحیم یار خان میں منعقد ہوا جس کی صدارت رحیم یار خان کے سینئر شاعر ،جناب جاوید حمید خلجی صاحب، نے کی مہمانِ خصوصی ،جناب مرزا فیصل صاحب، تھے ۔ اجلاس کا باقاعدہ آغاز تلاوت ِ کلام پاک سے ہوا جس کی سعادت ،الطاف ملکؔ، نے حاصل کی تلاوت کے بعد تعارفی سیشن کا آغاز ہوا جس میں تنظیم کا منشور تمام حاضرین کے سامنے پیش ہوا جس پر بات کرتے ہوئے تنظیم کے سرپرست ،جناب اجمل فرید صاحب، نے بتایا کہ ہماری تنظیمکا منشور ادب دوست ہے اور ہم اس منشور پر عمل درآمد کرتے ہوئے رحیم یار خان کا نام ادبی منظر نامے پر لانے کی بھرپور کوشش کریں گے اور بتایا کے ہمارے عہدیداران کا طریقہ انتخاب جمہوری ہے اور تنظیم کا دائرہ کار مختلف تعلیمی اداروں تک وسیع کیا جائے گا تا کہ نوجوان ادب کی طرف راغب ہو سکیں ۔ اس کے بعد تنظیم کے صدر ،جناب عمیر نجمی، نے بھی منشور پر روشنی ڈالی اور شرکا ء کا شکریہ ادا کیا ۔
اس کے بعد تنقیدی نشست کا آغاز ہوا جس میں ،جناب مژدم خان، نے اپنی غزل تنقید کے لئے پیش کی جس پر ، عمیر نجمی، خاور اسد ، باسط اسمعیل ، ضیا مذکور، اور اجمل فرید صاحب، نے بات کی اور اس غزل کے محاسن اور عیوب پر روشنی ڈالی اور سارے شعرا کرام نے مجموعی طور پر غزل کو اچھا قرار دیا اس کے بعد صاحب صدر جناب ،جاوید حمید خلجی صاحب، نے غزل پر تنقید کی اور آخر میں صدارتی خطبہ پیش کیا ۔ اس تنقیدی نشست کے بعد عید میلاد النبیؐ کے حوالے سے نعتیہ محفل مشاعرہ کا آغاز ہوا جس میں تمام شعرا کرام نے اپنا اپنا نعتیہ کلام پیش کیا ۔ نعتیہ کلام پیش کرنے والے شعراء کرام میں، جناب اجمل فرید، الطاف ملک ،ضیامذکور،مژدم خان، مرزا فیصل،عمیر نجمی ، خاور اسد، جناب کریم مسعود اور جاوید حمید خلجی صاحب تھے۔ آخر میں اس تنظیم کی کامیابی کے لئے دعا کی گئی ۔ اور اجلاس اختتام پذیر ہوا۔





مصنف کے بارے میں


...

کن

01/12/2017 - | Rahim Yar Khan


ادبی تنظیم کُن رحیم یار خان سے تعلق رکھنے والے آٹھ نوجوان دوستوں کی اختراع ہے جس کی سرپرستی جناب اجمل فرید صاحب کر رہے ہیں۔ یکم دسمبر 2017 سے اپنے سفر کا باقاعدہ آغاز کرنے والی اس تنظیم کا واحد مقصد رحیم یار خان میں ادبی جمود کو توڑنا ہے اور رحیم یار خان سمیت پاکستان بھر کے نوجوان شعراء اور تمام فنونِ لطیفہ سے تعلق رکھنے والے نوجوانوں کو ایک ادبی پلیٹ فارم تک رسائی دینا ہے۔ جمہوری انداز میں رائے شماری کے بعد تنظیمی ڈھانچہ اس طرح ہے کہ اس تنظیم کی صدارت عمیر نجمی کے پاس ہے۔ تنظیم کے جنرل سیکرٹری الطاف ملکؔ، فنانس سیکرٹری شہام شاہد اور انفارمیشن سیکرٹری کاشف نواز ہیں ۔ تنظیم کے اس سفر کے باقی قافلے میں مژدم خان، شہباز پدم اور عمر خان شامل ہیں۔




Comments