میں اپنی ماں کی دعا سے سلام کہتا ہوں



میں باوفا کی وفا سے سلام کہتا ہوں 
نبی کے پیارے نواسے سلام کہتا ہوں

یہ اور بات کہ تو آج جان پایا ہے
وگرنہ میں تو سدا سے سلام کہتا ہوں

ہماری گھٹی میں آل نبی کی الفت ہے
میں اپنی ماں کی دعا سے سلام کہتا ہوں

مرے خدا نے بھی انؑ پر سلام بھیجے ہیں 
میں کبریا کی رضا سے سلام کہتا ہوں

نجانے کونسی کرب و بلا سے گزرے حسیب
میں ہر طرف کی ہوا سے سلام کہتا ہوں

حسیب الحسن





مصنف کے بارے میں


...

حسیب الحسن

1995 - 1995 | خوشاب





Comments