نہ ہو وہ غم تو تگ و تاز میں نہیں آتا




نہ ہو وہ غم تو تگ و تاز میں نہیں آتا 
پرند حالت_ پرواز میں نہیں آتا

عجیب دن ہیں کہ آنکھیں چھلکتی رہتی ہیں
عجیب دکھ ہے جو الفاظ میں نہیں آتا

وفا و مہر کی حد ہے سناں پہ سر ہونا 
یہ مرحلہ کہیں آغاز میں نہیں آتا

وہ طفل و زن لیے مقتل نشیں ہے اور کوئی
برائے تخت اس انداز میں نہیں آتا 

ہے گر  وہ پیاس ترے دل میں بولنے والے
تو کیوں وہ نم تری آواز میں نہیں آتا

یہ دن کہ دائمی مغموم لکھ دیے گئے ہیں
طربیہ انترا اس ساز میں نہیں آتا 

اگر وہ چاہے تو شمر و یزید شے کیا ہیں
ہے مصلحت جو وہ اعجاز میں نہیں آتا





مصنف کے بارے میں


...

احسان اصغر

December 30 ,1996 - January 25,2020 | Gujranwala


Poet




Comments

  • noimage cimg

    Arslan Ahmad

    اتنا شاندار سلام کم ہی پڑھنے کو ملا ہے۔

  • noimage cimg

    Arslan Ahmad

    اتنا شاندار سلام کم ہی پڑھنے کو ملا ہے۔ عقیدت کے پھول ہیں جو نچھاور ہو رہے ہیں۔ جیتے رہو دوست