غزل



دیکھا جو اس کی آنکھوں میں عمیر صدیقی


کچھ یوں بھی مسکرانا چاہا تھا عمیر صدیقی


گزر گئیں صدیاں اِک ملاقات کے بعد عمیر صدیقی


تصور کا کچھ اور ہی مدعا ہے عمار اقبال


یونہی بے بال و پر کھڑے ہوئے ہیں عمار اقبال


تھک گئے ہو؟ تَو تھکن چھوڑ کے جا سکتے ہو عمار اقبال


جہل کو آگہی بناتے ہوئے عمار اقبال


رنگ و رس کی ہوس اور بس عمار اقبال


دل سے باہر دروازوں کا کوئی مقصد نہیں فیضان ہاشمی


خشک روٹی توڑنی ہے، سرد پانی چاہئیے احمد جہاں گیر


گاتھا پڑھ کر آتش دھونکی، گنگا سے اشنان احمد جہاں گیر


مجھے چھوڑنے کا اثر جدا نہیں ہو رہا ارسلان احمد


ہمیں پتہ نہیں چلتا مگر پکارتے ہیں کبیر اطہر


تمہارے ہونٹوں سے جس کا گلا نکلتا ہے کبیر اطہر


تری اداسی مرے دکھ رقم نہیں ہیں دوست کبیر اطہر


ﺧﻮﺍﮨﺶ ﻭ ﺧﻮﺍﺏ ﮐﺎ ﻣﻠﺒﮧ ﺑﮭﯽ ﺗﻮ ﮨﻮ ﺳﮑﺘﺎ ﮨﻮﮞ کبیر اطہر


روز و شب یوں نہ اذیّت میں گزارے ہوتے کبیر اطہر


بن درھم دینار لگایا دل میں نے سعید سادھو


خمیدہ راہ کو سیدھا غلط بتایا ھے عقیل شاہ


جنت مری نجات سے آگے کی چیز ہے ارسلان احمد


کھیت ایسے سیراب نہیں ہوتے بھائی مستحسن جامی




پہلے پرانی یاد کو مرسل کیا گیا ارسلان احمد


چہرہ اس ایک شخص کا کافی نہیں ہے کیا محسن چنگیزی