مجھ کو دروازے پہ ہی روک لیا جاتا ہے



مجھ کو دروازے پہ ہی روک لیا جاتا ہے 
میرے آنے سے بھلا آپ کا کیا جاتا ہے ؟


اشک گرنے سے کوئی لفظ نہ مٹ جائے کہیں 
اُس کی تحریر کو عجلت میں پڑھا جاتا ہے

تُو اگر جانے لگا ہے تو پلٹ کر مت دیکھ 
موت لکھ کر تو قلم توڑ دیا جاتا ہے

میری لکنت پہ ترس کھاتے ہوئے دیکھ مجھے 
کتنی مشکل سے ترا نام لیا جاتا ہے

تم مصور ہو اُدھر دیکھ کے بتلاؤ ذرا 
ایسے منظر کو بھی تصویر کیا جاتا ہے ؟

تجھ کو بتلاتا مگر شرم بہت آتی ہے 
تیری تصویر سے جو کام لیا جاتا ہے





مصنف کے بارے میں


...

تہذیب حافی

5 دسمبر 1989 - | تونسہ شریف


اصل نام تہذیب الحسن قلمی نام تہذیب حافی۔ نئے انداز سے بھرپور، جدید اور خوبصورت لب و لہجے کے نوجوان شاعر تہذیب حافی 5 دسمبر 1989 کو تونسہ شریف(ضلع ڈیرہ غازیخان) میں پیدا ہوئے۔ مہران یونیورسٹی سے سافٹ وئیر انجینرنگ کرنے کے بعد بہاولپر یونیورسٹی سے ایم اے اردو کیا۔ آج کل لاہور مین مقیم ہیں۔




Comments