تهوڑا لکها اور زیادہ چهوڑ دیا



تهوڑا لکها اور زیادہ چهوڑ دیا 
آنے والوں کے لیے رستہ چهوڑ دیا


لڑکیاں عشق میں کتنی پاگل ہوتی ہیں
فون بجا اور چولہا جلتا چهوڑ دیا

بس کانوں پر ہاته رکهے تهے تهوڑی دیر 
اور پهر اس آواز نے پیچها چهوڑ دیا

روز اک پتا مجه میں آ کر گرتا ہے 
جب سے میں نے باغ میں جانا چهوڑ دیا

تم کیا جانو اس دریا پر کیا گزری 
تم نے تو بس پانی بهرنا چهوڑ دیا





مصنف کے بارے میں


...

تہذیب حافی

5 دسمبر 1989 - | تونسہ شریف


اصل نام تہذیب الحسن قلمی نام تہذیب حافی۔ نئے انداز سے بھرپور، جدید اور خوبصورت لب و لہجے کے نوجوان شاعر تہذیب حافی 5 دسمبر 1989 کو تونسہ شریف(ضلع ڈیرہ غازیخان) میں پیدا ہوئے۔ مہران یونیورسٹی سے سافٹ وئیر انجینرنگ کرنے کے بعد بہاولپر یونیورسٹی سے ایم اے اردو کیا۔ آج کل لاہور مین مقیم ہیں۔




Comments