Mademoiselle



خواب کی ترسیل محل کی دیواروں پر ہوتے ہی 
نیم برہنہ آنکھوں سے پوشیدہ جسم نوچنے والے
منہ کھول کے دیکھتے رہے بند آنکھوں سے سوچنے والے 
نیم کنواری دوشیزاؤں کے مخروطی ابھاروں پر لگے 
سونے کی جھالروں میں چھپے بیش قیمت ہیرے

تو کیا رانوں پہ چڑھا ہوا گوشت 
گدھ بنا دینے کے لیے کافی نہیں

کسی بھی دیکھنے والے کو! 
کسی بھی سوچنے والے کو!! 
کسی بھی نوچنے والے کو!!!






مصنف کے بارے میں


...

معید مرزا

18 December 1990 - | Dera Ghazi Khan, Punjab


معید مرزا




Comments