یو ای ٹی




میں نہیں تھا وہاں
کرسیوں کی قطاروں میں پھرتے ہوئے میں نے خود کو بہت دیر ڈھونڈا
سفیدی جو ملبوس کی شرط تھی
سیڑھیوں پر چہکتی لہکتی رہی
کیمرا خوبصورت مناظر پہ مہریں لگاتا ہوا سامنے آگیا
میں نہیں تھا مگر تالیوں سیٹیوں سے پریشان
سگریٹ جلاتے ہوئے گیلری کی طرف
ان کہی نظم کی لائینوں کو اچھالا تو اپنی سی آواز آئی
ارے تم یہاں 
میں۔ ۔ ۔ کہاں؟ میں۔۔۔
نہیں ہوں یہاں
میں بہت دور ہوں





Comments